• Web
  • Humsa
  • Videos
  • Forum
  • Q2A
rabia shakeel : meri dua hai K is bar imran khan app is mulk k hukmaran hun To: suman(sialkot) 5 years ago
maqsood : hi how r u. To: hamza(lahore) 5 years ago
alisyed : hi frinds 5 years ago
nasir : hi To: wajahat(karachi) 5 years ago
khadam hussain : aslamoalikum pakistan zinsabad To: facebook friends(all pakistan) 5 years ago
Asif Ali : Asalaam O Aliakum . To: Khurshed Ahmed(Kashmore) 5 years ago
khurshedahmed : are you fine To: afaque(kashmore) 5 years ago
mannan : i love all To: nain(arifwala) 5 years ago
Ubaid Raza : kya haal hai janab. To: Raza(Wah) 5 years ago
qaisa manzoor : jnab AoA to all 5 years ago
Atif : Pakistan Zinda bad To: Shehnaz(BAHAWALPUR) 5 years ago
khalid : kia website hai jahan per sab kuch To: sidra(wazraabad) 5 years ago
ALISHBA TAJ : ASSALAM O ELIKUM To: RUKIYA KHALA(JHUDO) 5 years ago
Waqas Hashmi : Hi Its Me Waqas Hashmi F4m Matli This Website Is Owsome And Kois Shak Nahi Humsa Jaise Koi Nahi To: Mansoor Baloch(Matli) 5 years ago
Gul faraz : this is very good web site where all those channels are avaiable which are not on other sites.Realy good. I want to do i..... 5 years ago
shahid bashir : Mein aap sab kay liye dua'go hon. 5 years ago
mansoor ahmad : very good streming 5 years ago
Dr.Hassan : WISH YOU HAPPY HEALTHY LIFE To: atif(karachi) 5 years ago
ishtiaque ahmed : best channel humsa live tv To: umair ahmed(k.g.muhammad) 5 years ago
Rizwan : Best Streaming Of Live Channels. Good Work Site Admin 5 years ago
سخت شرائط
[ Editor ] 20-01-2013
Total Views:957
آئی ایم ایف نے ‘سرکاری’ طور پر واضح کردیا ہے کہ اسے پاکستان پرعدم اعتماد ہے اور وہ مستقبل کے کسی قرض کو میکرو اکنامکس اصلاحات اور پالیسی کی تبدیلیوں کے محاذ پر ‘وسیع اور گہری سیاسی حمایت’ سے منسلک کر کے دیکھے گا۔

اگرچہ عالمی مالیاتی ادارے نے، مالیاتی اور حکومتی اصلاحات کے لیے اسلام آباد کے کیے گئے وعدوں کے نفاذ میں ناکامی پر گیارہ اعشاریہ تین ارب ڈالر کا اسٹینڈ بائےارینجمنٹ پروگرام مقررہ مدت سے قبل ہی ختم کردیا تھا، تاہم اس کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ اس نے پاکستان کے لیے کسی نئے قرض کو اصلاحات سے منسلک کرنے کے لیے عوامی سطح پر اظہار کیا ہے۔

پاکستان میں میکرو اکنامک کے پوسٹ پروگرام جائزے کے نتائج کی روشنی میں، ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے آئی ایم ایف کے ایک اہلکار کا کہنا تھا کہ ‘کسی نئے قرض کے لیے درخواست دینے سے قبل اسلام آباد کو میکرو اکنامک استحکام کے لیے اقدامات اٹھانے ہوں گے۔

اس بات کا مطلب ہے کہ اب حکومت کو آئی ایم ایف کے ڈالر سے اپنے زرِ مبادلہ کے ذخائر بڑھانے سے پہلے، ان سے کیے گئے معاہدوں کو پورا کرنا ہوگا۔

‘میکرو اکنامک ایڈجسٹمنٹ’ فہرست کے مطابق پاکستان کو نیا قرض جاری کرنے سے پہلے، توانائی کے شعبے کی تنظیم نو، غیر اہدافی زرِ اعانت (سب سڈی) کا خاتمہ، عوامی شعبوں کے ڈھانچوں کی تشکیلِ نو، ٹیکس نظام میں بھرپور تبدیلیاں، بیورو کریسی میں اصلاحات اور بجٹ خسارہ میں کمی لانا ہوگی۔

ان اقدامات کے نفاذ کا واضح مطلب ہے کہ حکومت کو مشکل اور غیر مقبول فیصلے کرنا پڑیں گے۔

اب یہ فیصلے چاہے آج کیے جائیں یا کل، آئی ایم اایف کے ساتھ مل کر ہوں یا اُس کے بغیر، ملکی معیشت کو تباہی سے بچانے کے لیے ان پر عمل کرنا ہی پڑے گا۔

اس وقت ملک میں زرِ مبادلہ کے ذخائر صرف ڈیڑھ ماہ کے امپورٹ بِلز کی ادائیگیوں کے برابر رہ گئے ہیں اور روپے کی قدر بدستور کم ہوتی جارہی ہے۔

ایسے میں غیر ملکی ماہرین نے صورتِ حال کا یہ نتیجہ نکالا ہے کہ ادائیگیوں میں توازن برقرار رکھنے کے لیے اس وقت پاکستان کو آئی ایم ایف سے اربوں ڈالرز کی ضرورت ہے۔

مزیدِ برآں، ہم اس وقت بھی قرض کے چنگل سے بچ سکتے ہیں اگر ہمارے سیاستدان معاشی استحکام اور بحالی کے لیے آئی ایم ایف کے تجویز کردہ ان سخت ترین فیصلوں کی ضرورت پر، عوام کو اعتماد میں لے کر وسیع اتفاقِ رائے پیدا کرسکیں تو۔

اس اقدام سے غیر ملکی سرمایہ کاروں اور قرض فراہم کرنے والے اداروں کو مثبت پیغام جائے گا، جس سے داخلی اور بیرونی ذرائع سے ملک میں سرمایہ کاری ہوسکتی ہے۔

اس وقت ہمی آئی ایم ایف سے قرض کی اشد ضرورت محسوس ہورہی ہے، تاہم ان اقدامات کے باعث فوری طور پر بھی نہیں تو کم از کم اگلے چند برس کے بعد قرض سے جان چھڑائی جاسکتی ہے۔
(ڈان نیوز)

About the Author: Editor
Visit 171 Other Articles by Editor >>
Comments
Add Comments
Name
Email *
Comment
Security Code *


 
مزید مضامین
کراچی اسٹاک ایکسچینج میں 109 پوائنٹس کا اضافہ کراچی اسٹاک ایکسچینج میں تیزی کا رجحان رہا اور کے ایس ای 100 انڈیکس 109.62 پوائنٹس کے اضافہ سے 16291.09 پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای 30 انڈیکس بھی اضافہ دیکھا گیا۔ جمعرات کو کراچی اسٹاک ایکسچینج میں .... مزید تفصیل