• Web
  • Humsa
  • Videos
  • Forum
  • Q2A
rabia shakeel : meri dua hai K is bar imran khan app is mulk k hukmaran hun To: suman(sialkot) 4 years ago
maqsood : hi how r u. To: hamza(lahore) 4 years ago
alisyed : hi frinds 4 years ago
nasir : hi To: wajahat(karachi) 4 years ago
khadam hussain : aslamoalikum pakistan zinsabad To: facebook friends(all pakistan) 4 years ago
Asif Ali : Asalaam O Aliakum . To: Khurshed Ahmed(Kashmore) 4 years ago
khurshedahmed : are you fine To: afaque(kashmore) 4 years ago
mannan : i love all To: nain(arifwala) 4 years ago
Ubaid Raza : kya haal hai janab. To: Raza(Wah) 4 years ago
qaisa manzoor : jnab AoA to all 4 years ago
Atif : Pakistan Zinda bad To: Shehnaz(BAHAWALPUR) 4 years ago
khalid : kia website hai jahan per sab kuch To: sidra(wazraabad) 4 years ago
ALISHBA TAJ : ASSALAM O ELIKUM To: RUKIYA KHALA(JHUDO) 4 years ago
Waqas Hashmi : Hi Its Me Waqas Hashmi F4m Matli This Website Is Owsome And Kois Shak Nahi Humsa Jaise Koi Nahi To: Mansoor Baloch(Matli) 4 years ago
Gul faraz : this is very good web site where all those channels are avaiable which are not on other sites.Realy good. I want to do i..... 4 years ago
shahid bashir : Mein aap sab kay liye dua'go hon. 4 years ago
mansoor ahmad : very good streming 4 years ago
Dr.Hassan : WISH YOU HAPPY HEALTHY LIFE To: atif(karachi) 4 years ago
ishtiaque ahmed : best channel humsa live tv To: umair ahmed(k.g.muhammad) 4 years ago
Rizwan : Best Streaming Of Live Channels. Good Work Site Admin 4 years ago
چڑیوں کے گھونسلوں میں سگریٹ کے فلٹرز
[ Editor ] 13-12-2012
Total Views:689

ایک تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ پرندے اپنے گھونسلے کو گرم اور کیڑوں سے محفوظ رکھنے کے لیے سگریٹ کے ’بٹ‘ یعنی فلٹرز کا استعمال کرتے ہیں۔


سینٹ اینڈریوز یونیورسٹی میں کی جانے والی ایک تحقیق کے مطابق سگریٹ کے فلٹروں میں موجود ’نکوٹین‘ اور دیگر کیمیائی مواد قدرتی طور پر کیڑا شکن کے طور پر کام کرتے ہیں۔





ساتھ ہی ’سیلولوز‘ کے بنے ہوئے فلٹرز گھونسلے کو سردی سے بچانے میں بھی کارآمد ہوتے ہیں۔جنگلی پرندے اپنے گھونسلے کو کیڑوں سے بچانے کے لیے مخصوص کیمیائی مادہ خارج کرنے والے پودوں کا استعمال بھی کرتے ہیں۔


اس تحقیق میں سائنسدانوں نے میکسیکو سٹی میں عام اور زرد چڑیوں کے گھونسلوں کا جائزہ لیا جن میں اوسطً دس اور زیادہ سے زیادہ سگریٹ کے اڑتالیس فلٹر موجود تھے۔دونوں قسم کی چڑیوں کے جن گھونسلوں میں زیادہ سگریٹ کے فلٹرز موجود تھے ان میں ہی کیڑوں کی تعداد قدرے کم تھی۔


ان فلٹروں کی کیڑا شکن خصوصیات کو آزمانے کے لیے محققین نے نئے اور استعمال شدہ سگریٹوں کے فلٹرزگھونسلوں میں لگائے۔ان کے ساتھ بیٹری سے چلنے والے ’تھرمل‘ شکنجے لگائے گئے ہیں جو کہ حرارت سے کیڑوں کو گھونسلوں کی طرف راغب کرتے ہیں۔ جن سگریٹ کے فلٹروں میں نکوٹین والے فلٹر تھے، ان میں کہیں کم کیڑے آئے۔


رائل سوسائٹی کے جریدے بائیولوجی لیٹرز میں محققین کا کہنا تھا کہ ’ہم یہ ثابت کر رہے ہیں کہ شہری علاقوں کے پرندے استعمال شدہ سگریٹ کے فلٹرز میں موجود سیلولوز اپنے گھونسلے میں لگاتے ہیں اور اس اقدام کا مقصد گھونسلے میں آنے والے کیڑوں کی تعداد میں کمی کرنا ہے۔‘انہوں نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ نکوٹین کیڑوں کے خلاف قدرتی دفاعی کیمیائی مادے کے طور پر کام کرتا ہے۔


نکوٹین کو کھیتوں اور مرغیوں کے فارموں میں بھی کیڑوں کے خلاف استعمال کیا جاتا ہے۔سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ ممکن ہے کہ یہ ایک اتفاق ہو اور پرندے سگریٹ کے فلٹروں کا استعمال صرف گھونسلے میں سردی کم کرنے کے لیے کر رہے ہوں۔اس بات کا تعین کرنے کے لیے کہ کیا پرندے استعمال شدہ یا غیر استعمال شدہ سگریٹ کے فلٹروں میں فرق کرتے ہیں، سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ مزید تحقیق کرنا ہوگی۔

















About the Author: Editor
Visit 171 Other Articles by Editor >>
Comments
Add Comments
Name
Email *
Comment
Security Code *


 
مزید مضامین
 گھٹتے جنگل جیسا کہ پاکستان میں متعدد مقامات پر یہی صورتِ حال درپیش ہے، سندھ میں بھی، جنگلات کارقبہ تیزی سے کم رہا ہے۔ گذشتہ چند دہائیوں کے دوران سندھ کے چھور جنگل کا درختوں سے ڈھکا رقبہ نہایت تیزی سے کم ہوا، .... مزید تفصیل