• Web
  • Humsa
  • Videos
  • Forum
  • Q2A
rabia shakeel : meri dua hai K is bar imran khan app is mulk k hukmaran hun To: suman(sialkot) 5 years ago
maqsood : hi how r u. To: hamza(lahore) 5 years ago
alisyed : hi frinds 5 years ago
nasir : hi To: wajahat(karachi) 5 years ago
khadam hussain : aslamoalikum pakistan zinsabad To: facebook friends(all pakistan) 5 years ago
Asif Ali : Asalaam O Aliakum . To: Khurshed Ahmed(Kashmore) 5 years ago
khurshedahmed : are you fine To: afaque(kashmore) 5 years ago
mannan : i love all To: nain(arifwala) 5 years ago
Ubaid Raza : kya haal hai janab. To: Raza(Wah) 5 years ago
qaisa manzoor : jnab AoA to all 5 years ago
Atif : Pakistan Zinda bad To: Shehnaz(BAHAWALPUR) 5 years ago
khalid : kia website hai jahan per sab kuch To: sidra(wazraabad) 5 years ago
ALISHBA TAJ : ASSALAM O ELIKUM To: RUKIYA KHALA(JHUDO) 5 years ago
Waqas Hashmi : Hi Its Me Waqas Hashmi F4m Matli This Website Is Owsome And Kois Shak Nahi Humsa Jaise Koi Nahi To: Mansoor Baloch(Matli) 5 years ago
Gul faraz : this is very good web site where all those channels are avaiable which are not on other sites.Realy good. I want to do i..... 5 years ago
shahid bashir : Mein aap sab kay liye dua'go hon. 5 years ago
mansoor ahmad : very good streming 5 years ago
Dr.Hassan : WISH YOU HAPPY HEALTHY LIFE To: atif(karachi) 5 years ago
ishtiaque ahmed : best channel humsa live tv To: umair ahmed(k.g.muhammad) 5 years ago
Rizwan : Best Streaming Of Live Channels. Good Work Site Admin 5 years ago
سعودی عرب کا قدیم ان دیکھا فن منظرِ عام پر
[ Editor ] 14-12-2012
Total Views:765

امریکہ کے شہر واشگنٹن میں جاری ایک نمائش میں سعودی فن اور قابلیت کی ایک ان دیکھی شکل ظاہر ہوئی ہے جو خطے کی تہذیب اور تاریخی حیثیت میں انقلابی تبدیلی لائی ہے۔


چار سو برسوں سے ایک عام تاثر کے مطابق عرب تہذیب پر اسلام کا غلبہ ہے لیکن علاقے میں آثار قدیمہ کے لیے کی جانے والے کھدائی کے دوران قبل از اسلام کی سعودی عرب کی زندگی کے کچھ شواہد ملے ہیں۔


مصالحوں اور خوشبو کی تجارت کے لیے قافلوں کی آمد و رفت قرن افریقہ سے ایران اور بحیرہ روم کے ساحلی علاقوں کی جانب ہوا کرتی تھی۔ اس کا مرکز جـزیرہ نما عرب تھا جو تہذیب اور تجارت سے وابستہ اقوام کا گڑھ تھا۔


واشنگٹن میں ’سیکلر اینڈ فریئر گیلریز آف ایشین آرٹ‘ کے ڈائریکٹر ڈاکٹر جولین رابی کا کہنا ہے ’ہم نے جو سعودی عرب دیکھا وہ الگ جزیرہ نما نہیں ہے۔ یہ درحقیقت قدیم دنیا سے بہت زیادہ جڑا ہوا ہے۔‘


ان کا مزید کہنا تھا کہ ’یہ انتہائی اہم سبق ہے کیونکہ ہم نے یہ سوچنا شروع کر دیا تھا کہ سعودی عرب ہمیشہ سے دنیا سے کٹا ہوا، ہمیشہ سے ایک صحرا اور پابند علاقہ تھا۔ لیکن سب جھوٹ ثابت ہو گیا‘۔


چھ ہزار سال قبل کے دیو قامت مجسمے، تانبے کی مورتیوں، شیشے کے سامان، زیورات اور پتھروں پر بنے پُراسرار لوح اُن اشیاء میں شامل ہیں جو اس نمائش میں رکھے گئے ہیں۔


اس نمائش میں خاص طور پر اس بات کو اہمیت دی گئی ہے کہ ساتویں صدی میں اسلام کی آمد سے قبل کتنی بڑی تعداد میں لوگ فن سے وابستہ تھے۔ اسلام کی آمد کے بعد فن کا اظہار بڑے پیمانے پر خطاطی تک محدود ہو گیا۔


اس نمائش میں رکھی گئی بعض اہم چیزوں میں خالص یونانی تانبے سے بنا ہرکولیس کا مجسمہ جو دوسری صدی عیسوی کا ہے اور پتھر کے بنے مجسموں کا ایک گروہ شامل ہے جو تیسری اور چوتھی صدی قبل از مسیح میں کسی مندر کے استقبالیہ میں رکھے گئے تھے۔


ڈاکٹر رابی کے مطابق ’ان میں سے کوئی بھی چیز پہلے امریکہ میں نہیں دیکھی گئی۔ ماہرین کے لیے یہ ایک انکشاف ہے۔‘


ان کا مزید کہنا تھا ’اسلام سے قبل کیا ہوا اس بارے میں کئی لوگ یا تو جانتے نہیں یا ان کا علم بہت محدود ہے۔


 



About the Author: Editor
Visit 171 Other Articles by Editor >>
Comments
Add Comments
Name
Email *
Comment
Security Code *


 
مزید مضامین
اسماعیلی اسماعیلی ، اہل تشیع کا ایک تفرقہ ہے جس میں حضرت امام جعفر صادق (پیدائش 702ء) کی امامت تک اثنا عشریہ اہل تشیع سے اتفاق پایا جاتا ہے اور یوں ان کے لیۓ بھی اثنا عشریہ کی طرح جعفری کا لفظ بھی مستعمل ملتا ہے .... مزید تفصیل
ریل کی سیٹی ہندوستان کی سرزمین پہ سولہ اپریل 1853 کے دن پہلی بار ریل چلی تھی۔ جس طرح پل بنانے والے نے دریا کے اس پار کا سچ اس پار کے حوالے کیا ، اسی طرح ریل کے انجن نے فاصلوں کو نیا مفہوم عطا کیا۔ اباسین ایکسپریس ، .... مزید تفصیل
ایک کروڑ سال قدیم بندر کی باقیات ڈومینکن ریپبلک میں گہرے پانی میں غوطہ خوری کے دوران ایک غار سے بندر کی ایک نایاب نسل کی باقیات ملی ہیں۔ سائنسدان ان باقایات کا معائنہ کر رہے ہیں۔ محقیقین کا کہنا ہے کہ یہ باقیات تقریباً تین ہزار سال .... مزید تفصیل