• Web
  • Humsa
  • Videos
  • Forum
  • Q2A
rabia shakeel : meri dua hai K is bar imran khan app is mulk k hukmaran hun To: suman(sialkot) 5 years ago
maqsood : hi how r u. To: hamza(lahore) 5 years ago
alisyed : hi frinds 5 years ago
nasir : hi To: wajahat(karachi) 5 years ago
khadam hussain : aslamoalikum pakistan zinsabad To: facebook friends(all pakistan) 5 years ago
Asif Ali : Asalaam O Aliakum . To: Khurshed Ahmed(Kashmore) 5 years ago
khurshedahmed : are you fine To: afaque(kashmore) 5 years ago
mannan : i love all To: nain(arifwala) 5 years ago
Ubaid Raza : kya haal hai janab. To: Raza(Wah) 5 years ago
qaisa manzoor : jnab AoA to all 5 years ago
Atif : Pakistan Zinda bad To: Shehnaz(BAHAWALPUR) 5 years ago
khalid : kia website hai jahan per sab kuch To: sidra(wazraabad) 5 years ago
ALISHBA TAJ : ASSALAM O ELIKUM To: RUKIYA KHALA(JHUDO) 5 years ago
Waqas Hashmi : Hi Its Me Waqas Hashmi F4m Matli This Website Is Owsome And Kois Shak Nahi Humsa Jaise Koi Nahi To: Mansoor Baloch(Matli) 5 years ago
Gul faraz : this is very good web site where all those channels are avaiable which are not on other sites.Realy good. I want to do i..... 5 years ago
shahid bashir : Mein aap sab kay liye dua'go hon. 5 years ago
mansoor ahmad : very good streming 5 years ago
Dr.Hassan : WISH YOU HAPPY HEALTHY LIFE To: atif(karachi) 5 years ago
ishtiaque ahmed : best channel humsa live tv To: umair ahmed(k.g.muhammad) 5 years ago
Rizwan : Best Streaming Of Live Channels. Good Work Site Admin 5 years ago
اُجالے اُن کی یادوں کے ۔ ۔ ۔
[ Editor ] 17-12-2012
Total Views:1109

دنیا کی اہم ترین زبانوں میں سے ایک اردو زبان پر کراچی میں اہم  منعقد ہوئی۔


کراچی آرٹس کونسل میں منعقد کی جانےوالی اس کانفرنس میں اردو زبان کے کئی پہلووں پر گفتگو ہوئی جس میں اردو دنیا کے نامور ادیبوں ، شاعروں  اور مصنفوں نے اظہارِ خیال کیا۔


کانفرنس کے دوسرے روز، سات دسمبر کو یادِ رفتگاں کے عنوان سے ایک اہم سیشن میں اردو ادب کے ممتاز  ادیبوں، شاعروں اور اسکالروں کو خراجِ تحسین پیش کیا گیا۔ اس موقع پر لطف اللہ خان، شمشیرالحیدری، نظیر اکبر آبادی، ڈاکٹر سلیم الزماں صدیقی، حاجرہ مسرور ، حمید اختر اور دیگر پر آج کے معروف اہلِ قلم نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔


آصف فرخی نے منٹو صدی کے ہنگام میں کرشن چندر، کے عنوان سے اپنی اہم تقریر میں بتایا کہ منٹو کی طرح کرشن چندر نے بھی تقسیم پر اپنے خیالات پیش کئے اور غدار نامی ناول لکھا۔ انہوں نے سوال اُٹھایا کہ آج اس ناول کو کیوں نظر انداز کردیا گیا ہے؟


ڈرامہ و افسانہ نگار اصغر ندیم سید نے ممتاز ادیب اور صحافی حمید اختر کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ اول سے آخر تک جو بولتے تھے وہ کہانی ہوتی تھی۔ انہوں نے حمید اختر کا ایک واقعہ اس طرح بیان کیا۔


‘ اب ضیالحق کے مارشل لاء کی ایک اور کہانی سنیں۔ جو پکڑ دھکڑ فیض صاحب کی سالگرہ منانے پر ہوئی اس میں اداکار محمد علی کے ساتھ حمید اختر، شعیب ہاشمی، معراج خالد، اعتزاز احسن کے ساتھ کچھ اور نام بھی تھے۔ البتہ ایک نام غلطی سے آگیا اور وہ تھے اداکار حبیب۔ جن کا ترقی پسند تحریک یا سیاست سے کوئی تعلق نہ تھا۔ انہیں کچھ بھی پتا نہ چلا کہ وہ کس لئے دھرلئے گئے ہیں ۔ لیکن اتنے شریف انسان تھے کہ خاموش رہے اور سب کے ساتھ جیل پہنچ گئے۔ بعد میں معلوم ہوا ، حبیب جالب کے شبے میں پکڑے گئے۔ ‘


ممتاز ادبی شخصیت فاطمہ حسن نے لطف اللہ خان کا تعارف کراتے ہوئے کہا کہ انہیں بچپن سے سکے، ماجس کی ڈبیا اور تصاویر جمع کرنے کا شوق تھا اور جب وہ بڑے ہوئے تو آوازیں جمع کیں۔ اس آرکائیوسٹ نے ساٹھ برس میں پانچ ہزار سے زائد نایاب آوازیں اور تصاویر کا ایک خزانہ ترتیب دیا ہے۔


 


 


About the Author: Editor
Visit 171 Other Articles by Editor >>
Comments
Add Comments
Name
Email *
Comment
Security Code *


 
مزید مضامین